Raza e Muhammad
رضائے محمد ﷺ پر آپ کو خوش آمدید



 
HomeGalleryFAQUsergroupsRegisterLog in
www.kanzuliman.biz.nf
Raza e Muhammad

Hijri Date

Latest topics
» نماز کے اوقات (سوفٹ وئیر)
Wed 14 Aug 2013 - 4:43 by arshad ullah

» بے مثل بشریت
Tue 12 Feb 2013 - 6:53 by Administrator

» Gucci handbags outlet online
Thu 17 Jan 2013 - 2:19 by cangliang

» hermes Birkin 30
Thu 17 Jan 2013 - 2:18 by cangliang

» CHRISTIAN LOUBOUTIN EVENING
Sun 13 Jan 2013 - 6:06 by cangliang

» Cheap Christian Louboutin Flat
Sun 13 Jan 2013 - 6:05 by cangliang

» fashion CHRISTIAN LOUBOUTIN shoes online
Sun 13 Jan 2013 - 6:05 by cangliang

» Christian Louboutin Evening Shoes
Wed 9 Jan 2013 - 5:36 by cangliang

» CHRISTIAN LOUBOUTIN EVENING
Wed 9 Jan 2013 - 5:35 by cangliang

Search
 
 

Display results as :
 
Rechercher Advanced Search
Flag Counter

Share | 
 

 نعمتیں بانٹتا جس سمت وہ ذی شان گیا

View previous topic View next topic Go down 
AuthorMessage
Administrator
Admin
Admin
avatar

Posts : 1220
Join date : 23.02.2009
Age : 37
Location : Rawalpindi

PostSubject: نعمتیں بانٹتا جس سمت وہ ذی شان گیا   Tue 30 Nov 2010 - 5:11

نعمتیں بانٹتا جس سمت وہ ذی شان گیا
یہ وہ سچ ہے کہ جسے ایک جہاں مان گیا
در پے آیا جو گدا بن کے وہ سلطان گیا
اُس کے اندازِ نوازش پے میں قربان گیا
نعمتیں بانٹتا جس سمت وہ ذی شان گیا
ساتھ ہی منشئِ رحمت کا قلمدان گیا

تجھ سے جو پھیر کے مُنہ جانبِ قرآن گیا
سرخرو ہوکے نہ دنیا سے وہ انسان گیا
کتنے گستاخ بنے، کتنوں کا ایمان گیا
لے خبر جلد کہ اوروں کی طرف دھیان گیا
مرے مولا، مرے آقا تیرے قربان گیا

محوِ نظارہ سِرِ گنبد خضری ہی رہی
دور سے سجدہ گذارِ درِ والا ہی رہی
روبرو پاکے بھی محرومِ تماشا ہی رہی
آہ، وہ آنکھ کہ ناکامِ تمنا ہی رہی
ہائے وہ دل جو تیرے در سے پُر ارمان گیا

تیری چاہت کا عمل زیست کا منشور رہا
تیری دہلیز کا پھیر مرا دستور رہا
یہ الگ بات کے تو آنکھ سے مستور رہا
دل وہ دل دل جو تیری یاد سے معمور رہا
سر وہ سر جو تیرے قدموں پہ قربان گیا

دوستی سے کوئی مطلب نہ مجھے بَیر سے کام
ان کے صدقے میں کسی سے نہ پڑا غیر سے کام
ان کا شیدا ہو ، مجھے کیا حرم و دیر سے کام
انہیں مانا، انہیں جانا، نہ رکھا غير سے کام
للہِ الحمد میں دنیا سے مسلمان گیا

احترام نبوی داخلِ عادت نہ سہی
شِیرِ مادر میں اصلیوں کی نجات نہ سہی
گھر میں آداب رسالت کی روایت نہ سہی
اور تم پر میرے مولا کی عنایت نہ سہیـ
نجدیو، کلمہ پڑھانے کا بھی احسان گیا

بامِ مقصد پہ تمناوں کے زینے پہنچے
لبِ ساحل پہ نصیر اُن کے سفینے پہنچے
جن کو خدمت میں بلایا تھا نبی نے پہنچے
جان و دل ، ہوش و خرد سب تو مدینے پہنچے
تم نہیں جاتے رضا سارا تو سامان گیا

=================================================================================
خدا کی رضا چاہتے ہیں دو عالم
خدا چاہتا ہے رضائے محمد



قیصر مصطفٰی عطاری
http:www.razaemuhammad.co.cc
Back to top Go down
View user profile http://razaemuhammad.123.st
 
نعمتیں بانٹتا جس سمت وہ ذی شان گیا
View previous topic View next topic Back to top 
Page 1 of 1

Permissions in this forum:You cannot reply to topics in this forum
Raza e Muhammad :: رضائے محمد ﷺ لائبریری :: حمد نعت منقبت-
Jump to:  
Free forum | © phpBB | Free forum support | Contact | Report an abuse | Have a free blog with Sosblogs